Home / خیال / گرل فرینڈ اور جوتے

گرل فرینڈ اور جوتے

کل بہت راتوں کے بعد مزے کی نیند آئی پر صبح سویرے کسی نے وصّیؔ شاہ کو پوسٹ کر دیا۔ اور وہ بھی چلو ’’آنکھ کا کاجل ‘‘وغیرہ ہوتا تو خیر تھی مگر یہاں معمالہ اس سے بھی گھمبیر تھا۔ اس نظم کا عنوان تو نہیں یاد اور نہ ہی پوسٹ کرنےوالے نے لکھا پر اتنا بتاتا ہوں کہ یہ وہی نظم ہے جس میں وہ اپنی گرل فرینڈ یا بیوی کے ہوتے ہوئے اور پھر اس کے چلے جانے کے بعد اپنی زندگی کا فرق بتاتے ہیں۔’’ یعنی بیفور اور آفٹر ۔۔۔۔ مائی گرل فرینڈ یا بیوی یا جو بھی تھی‘‘۔ میں نے پوسٹ کرنے والے سے کہا کہ مجھے وصّیؔ شاہ کو ناپسند کرنے کی وجہ یاد دلانے کے لیے میں اس کا مشکور ہوں لیکن بھائی اگر گرل فرینڈ یا بیوی سے جوتے پولش کرواو گے توبیچاری نے بھاگنا ہی ہے۔ ہاں بہت ساری نہیں بھی بھاگتی ہیں شاید رسم و رواج، مذہب اور تقدس کی وجہ سے ۔پرجوتے پولش کروانا تو کسی لحاظ سے بھی مناسب نہیں نہ ہی مذہب اور تقدس کے لحاظ سے۔ کے ہے۔ آپ تبصرہ کریں ذرا؟

عمران خوشحال

Check Also

نہ چاہو مجھے جاں سے زیادہ تم

نہ چاہو مجھے جاں سے زیادہ تم پر کرو تو ساتھ چلنے کا ارادہ تم …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے