Home / عمومی / تجھ سے پہلے حالت نہیں تھی یہ

تجھ سے پہلے حالت نہیں تھی یہ

Nehi thi Ye

تجھ سے پہلے حالت نہیں تھی یہ

ذہن و دل کی صورت نہیں تھی یہ

 

اک جہدِ مسلسل سے جیتا ہے تجھے

تو ایسے ہی مل جاتی قسمت نہیں تھی یہ

 

ذرا ان کا تو سوچو جنھوں نے عمر بھر کی

اور پھر سمجھے کہ او ، محبت نہیں تھی یہ

 

ہجر میں پہلے یاد آتی تھی بس

ہجر میں پہلے وحشت نہیں تھی یہ

 

کیا ہو جو قصداً بہکنے کو پی کر ہم

مکر جائیں کہ نہیں نیت نہیں تھی یہ

***عمران خوشحال راجہ***

 

Check Also

نہ چاہو مجھے جاں سے زیادہ تم

نہ چاہو مجھے جاں سے زیادہ تم پر کرو تو ساتھ چلنے کا ارادہ تم …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے